عجب طرز ملاقات اب کی بار رہی

تم تھی بدلی ہوہی یا مری نگاہ تھی

بہت ڈونڈا ہے شب فراق میں تمہں

نہ تم ملی نہ تیری صدا تھی

میں نے ساتھہ نہبایا تیرا ھر سو

مگر میں بھی تنہا تھا تم بھی تنہا تھی

کیا ہوا اچانک کے تم بدل گھی

تماری تھی یا دل کی یہ چاہ تھی

بہت تڑپا ہو ترے اس فیصلے پر

جدر سے گذرا ہوں کانٹوں بھری راہ تھی

کچھہ تو خیال کر لیتی پرانی محبت کا

کہاں تیرا مسکرانہ کہاں وہ تیری حیاہ تھی

سنا رقیبوں نے تو ھنس کر کہا

اسے تو محبت یی اس سے بے پناہ تھی

چلو اچھا ہوا سمٹ کے محدود ہو گہی

جس کا چرچا جس کی یاد جا بجا تھی

مانگی بھی تو سعادت اس نے جدایی مانگی

کسی جرم کی پانی یی مجھے یہ سزا تھی

Posted on : [20/01/2010]
Posted by : saadat amin satti
Mobile # : 00971503235016
More Messages by Sender : Click Here

Send to email Address

Get Latest SMS in your email address :


Similar Love Quotes SMS